India can’t defeat Pakistan militarily- Asthana book

India can’t defeat Pakistan militarily- Asthana book

India can’t defeat Pakistan militarily- Asthana book

A former Indian police officer NC Asthana has revealed many things about the Indian army, politics, and Indian media. Recently he wrote his book by the name ” National Security and Conventional Arms ” in which he clearly said that “India can not defeat Pakistan and China militarily”. Further, he said that India has no clarity about its military and strategic purposes.

On 29 December, Siddharth Varadarajan, a news editor, said in a review in THE WIRE  news channel by giving reference to NC Asthana book that “India has no clarity about its military and strategic purposes and neither defeat Pakistan and china military in war”.

Indian Media Quite opposite-India can’t defeat Pakistan militarily

Siddharth Varadarajan further using the reference of NC Asthana book said there is a big difference, at one side there is Indian military and Indian media talked all time about to start a war with Pakistan and China, and on the other side the reality is that India can not defeat any country.

In this review further using the reference of NC Asthana book he said India should not pay attention to waste a large amount of money on importing expensive weapons. Rather than this, it should find solutions to security challenges by strengthening its economy and also diplomacy.

The author also criticizes Indian politics in his book. He said Indian politics misleading the Indian public for the last six years. The author said somehow it has become an illusion that India has become an undefeatable country that’s why the majority of the Indian public talked about war with Pakistan and China. He also said

“ Indian politicians use Pakistan as an enemy to fool their public for getting benefits in the election while Pakistan is also a strong nuclear power”.

How Much Money India Spent On Weapons although India can’t defeat Pakistan militarily- Asthana book

By importing expensive weapons it became an illusion that India has become an undefeatable country and further on, Indian media added fuel on this fire. The author also revealed that India has spent almost 14 billion dollars importing weapons from 2014. However, the cost of the 36 Rafale jets is not added to this amount.

India is going to plan almost 130 billion dollars in the next decade. Indian media has seemed much publicized the Rafales jets promotion as a great weapon to the Indian public as it can defeat any enemy easily but it’s far beyond some extent of reality.

NC Asthana further discussed in his book that India can never defeat Pakistan or china by importing expensive conventional weapons. Because both countries also have nuclear power that’s why they can’t be defeated in the field of battle. From this point of view, India should stop talking of war but in spite of it India always talks about starting a war, he further added.

Asthana further said using Napoleon Bonapart as a reference “ If they want peace, nations should avoid the pinpricks that precede cannon shots” According to Asthana, India has a bigger army than the Pakistan army but it’s impossible to get a conclusion from this. Because both countries have nuclear powers.

More he said, somehow at a moment Pakistan feels to lose a war from Indian bigger army then definitely Pakistan will use its nuclear power. This is not 1971. Asthana further said  by Recalling “what General Khalid Kidwai, head of Pakistan’s strategic command, said to Italian Italian arms control organization delegation about Pakistan’s red lines in 2002.”

General Kidwai said “if Pakistan feels insecure as a state then definitely Pakistan will use its nuclear power”

Asthana also summarises Gen Kidwai’s red lines as “ our nuclear weapons are only for India. At any moment if India attacks Pakistan then Pakistan will use it. And also if India tries to conqueror Pakistan’s territory, and also if India tries to destroy Pakistan’s land, and also if India tries to destroy Pakistan’s economy and also try for political destabilization in Pakistan. Examples of the economic strangling of Pakistan included a naval blockade and the stopping of the waters of the Indus River”.

Siddharth Varadarajan has confirmed by Indian intelligence assessments, the prime minister threatened Pakistan with the abrogation of the Indus Waters Treaty in 2016, saying “blood and water cannot flow together”.

You May Like: Turkey, UK signs free trade Agreement

ہندوستان پاکستان کو فوجی طور پر شکست نہیں دے سکتا-آستانہ کی کتاب

ایک سابق ہندوستانی پولیس افسر این سی استھانہ نے بھارتی فوج ، سیاست اور ہندوستانی میڈیا کے بارے میں بہت سی باتوں کا انکشاف کیا ہے۔ حال ہی میں انہوں نے اپنی کتاب “قومی سلامتی اور روایتی اسلحے” کے نام سے لکھی ہے جس میں انہوں نے واضح طور پر کہا تھا کہ “ہندوستان پاکستان اور چین کو فوجی طور پر شکست نہیں دے سکتا”۔ مزید ، انہوں نے کہا کہ بھارت کو اپنے فوجی اور اسٹریٹجک مقاصد کے بارے میں کوئی وضاحت نہیں ہے۔

 دسمبر29 کو ، ایک نیوز ایڈیٹر ، سدھارت ورادارجان نے THE WIRE نیوز چینل میں ایک جائزہ لینے کے دوران NC استھانہ کی کتاب کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ “ہندوستان کو اپنے فوجی اور اسٹریٹجک مقاصد کے بارے میں کوئی وضاحت نہیں ہے اور نہ ہی وہ پاکستان اور چین کی فوج کو جنگ میں شکست دیتا ہے”۔

اس کے برعکس ہندوستانی میڈیا – ہندوستان پاکستان کو فوجی طور پر شکست نہیں دے سکتا

سدھارت وراداراجان نے مزید کہا کہ این سی آستانہ کی کتاب کے حوالہ کو استعمال کرتے ہوئے کہا کہ اس میں ایک بڑا فرق ہے ، ایک طرف ہندوستانی فوج ہے اور ہندوستانی میڈیا نے پاکستان اور چین کے ساتھ جنگ ​​شروع کرنے کے بارے میں ہر وقت بات کی ہے ، اور دوسری طرف حقیقت یہ ہے کہ ہندوستان کسی بھی ملک کو شکست نہیں دے سکتے۔

اس جائزے میں این سی استھانہ کی کتاب کے حوالہ کو مزید استعمال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہندوستان کو مہنگے ہتھیاروں کی درآمد پر بڑی رقم ضائع کرنے پر توجہ نہیں دینی چاہئے۔ اس کے بجائے ، اسے اپنی معیشت کو مستحکم کرکے سیکیورٹی چیلنجوں کا حل تلاش کرنا چاہئے اور سفارت کاری بھی۔

مصنف نے بھی اپنی کتاب میں ہندوستانی سیاست پر تنقید کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی سیاست گذشتہ چھ سالوں سے بھارتی عوام کو گمراہ کررہی ہے۔ مصنف نے کہا کہ کسی طرح یہ وہم پیدا ہوگیا ہے کہ ہندوستان ایک ناقابل شکست ملک بن گیا ہے اسی لئے ہندوستانی عوام کی اکثریت نے پاکستان اور چین کے ساتھ جنگ ​​کی بات کی۔ اس نے کہا

ہندوستانی سیاستدان انتخابات میں فوائد حاصل کرنے کے لئے اپنے عوام کو بے وقوف بنانے کے لئے پاکستان کو دشمن کے طور پر استعمال کرتے ہیں جبکہ پاکستان ایک مضبوط جوہری طاقت بھی ہے۔

ہتھیاروں پر بھارت کتنا پیسہ خرچ کرتا ہے حالانکہ بھارت پاکستان کو عسکری طور پر شکست نہیں دے سکتا

مہنگے ہتھیاروں کی درآمد سے یہ وہم پیدا ہوا کہ ہندوستان ایک ناقابل شکست ملک بن گیا ہے اور مزید ہندوستانی میڈیا نے اس آگ پر ایندھن ڈال دیا۔ مصنف نے یہ بھی انکشاف کیا کہ ہندوستان نے 2014 سے ہتھیاروں کی درآمد پر لگ بھگ 14 بلین ڈالر خرچ کیے ہیں۔تاہم ، 36 رافیل طیاروں کی لاگت اس رقم میں شامل نہیں کی گئی ہے۔

اگلی دہائی میں ہندوستان تقریبا 130 بلین ڈالر کا منصوبہ بنانے جارہا ہے۔ ہندوستانی میڈیا نے رافلس طیاروں کی تشہیر کو ہندوستانی عوام کے لئے ایک بہت بڑا ہتھیار کے طور پر بہت زیادہ عام کیا ہے کیونکہ یہ کسی بھی دشمن کو آسانی سے شکست دے سکتا ہے لیکن یہ حقیقت کی حد سے زیادہ ہے۔

این سی استھانا نے اپنی کتاب میں مزید گفتگو کی کہ ہندوستان مہنگے روایتی ہتھیاروں کی درآمد کرکے پاکستان یا چین کو کبھی شکست نہیں دے سکتا۔ کیونکہ دونوں ممالک کے پاس بھی جوہری طاقت ہے اسی وجہ سے وہ میدان جنگ میں شکست نہیں کھا سکتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس نقطہ نظر سے ، بھارت کو جنگ کی باتیں کرنا بند کردیں لیکن اس کے باوجود ہندوستان ہمیشہ جنگ شروع کرنے کی بات کرتا ہے۔

آستانہ نے نپولین بونپارٹ کو بطور حوالہ استعمال کرتے ہوئے کہا کہ “اگر وہ امن چاہتے ہیں تو ، اقوام کو توپوں سے چلنے والے گولوں سے پہلے والی ان چالوں سے پرہیز کرنا چاہئے” استھانا کے مطابق ، بھارت کے پاس پاکستان کی فوج سے بڑی فوج ہے لیکن اس کا کوئی نتیجہ اخذ کرنا ناممکن ہے۔ کیونکہ دونوں ممالک کے پاس ایٹمی طاقتیں ہیں۔

مزید انہوں نے کہا ، کسی نہ کسی طرح پاکستان کو ہندوستان کی بڑی فوج سے جنگ ہارنے کا احساس ہورہا ہے تو یقینی طور پر پاکستان اپنی جوہری طاقت کا استعمال کرے گا۔ یہ 1971 کی بات نہیں ہے۔ استھانا نے مزید کہا کہ پاکستان کے اسٹریٹجک کمانڈ کے سربراہ جنرل خالد کدوائی نے 2002 میں اٹلی کے اطالوی اسلحہ کنٹرول تنظیم کے وفد کو پاکستان کی سرخ خطوط کے بارے میں کیا کہا تھا اسے یاد کرتے ہوئے کہا

جنرل کدوائی نے کہا کہ “اگر پاکستان بحیثیت ریاست غیر محفوظ محسوس ہوتا ہوگا تو یقینی طور پر پاکستان اپنی جوہری طاقت کا استعمال کرے گا”۔

آستانہ نے جنرل کدوائی کی سرخ لکیروں کا خلاصہ بھی کیا ہے کیونکہ “ہمارے جوہری ہتھیار صرف ہندوستان کے لئے ہیں۔ کسی بھی لمحے اگر بھارت پاکستان پر حملہ کرتا ہے تو پاکستان اسے استعمال کرے گا۔ اور یہ بھی کہ اگر بھارت پاکستان کی سرزمین کو فتح کرنے کی کوشش کرتا ہے ، اور یہ بھی کہ اگر بھارت پاکستان کی سرزمین کو تباہ کرنے کی کوشش کرتا ہے ، اور یہ بھی کہ اگر بھارت پاکستان کی معیشت کو تباہ کرنے کی کوشش کرتا ہے اور پاکستان میں سیاسی عدم استحکام کی کوشش بھی کرتا ہے۔ پاکستان کو معاشی طور پر گلا گھونٹنے کی مثالوں میں بحری ناکہ بندی اور دریائے سندھ کے پانی کو روکنا بھی شامل ہے۔

سدھارتھ ورادارجان نے بھارتی انٹلیجنس جائزوں کی تصدیق کی ہے ، وزیر اعظم نے سنہ 2016 میں انڈس واٹرس ٹریٹی کے خاتمے کی دھمکی دیتے ہوئے پاکستان کو دھمکی دی تھی کہ ، “خون اور پانی ایک ساتھ نہیں بہہ سکتے”۔

 

2 thoughts on “India can’t defeat Pakistan militarily- Asthana book”

  1. Pingback: Pakistan to buy 1.2 million COVID-19 vaccine doses from China’s Sinopharm - ilmKaGhar

  2. Pingback: Pakistan Govt Bans the Sacrilegious Britain Film - ilmKaGhar

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *